108,743 views 298 on YTPak
274 13

Published on 13 Jul 2010 | over 7 years ago

Bahadar shah zafar is one of most underrated poets of Urdu language. we need to explore him honestly which ll surely show us the hidden treasure of urdu literature . His poetry is full of extreme sadness shows pain he suffered . this is very natural because he not only enjoyed throne of Mughal empire but also suffered painful life of prison.we can see this effect in this ghazal too.

جن گلين ميں پہلے ديکھیں لوگن کی رنگ رلیاں تھیں
پھر دیکھا تو ان لوگن بن سونی پڑی وہ گلیاں تھیں
ایسی انکھیاں میچے پڑے ہیں کروٹ بھی نہیں لے سکدے
جن کی چالیں البیلی اور چلنے میں چھَل بلیاں تھیں
خــاک ان کا بستر ہے اور ســر کے نیـچے پتــھر ہے
ہائے وہ شکلیں پیاری پیاری کس کس چاؤ سے پلیاں تھیں
تلخی اٹھائی موت کے چکھے، خاک سب ان کو چاٹ گئی
جن کی باتیں میٹھی میٹھی مصری کی سی ڈلیاں تھیں !
Customize Your Hybrid Embed Video Player!

6-digit hexadecimal color code without # symbol.

 

Report video function is under development.

 


Loading related videos...