158,405 views 524 on YTPak
388 29

Published on 01 Mar 2008 | over 9 years ago

Jab bahar aai to sehra ki taraf chal nikla
sehn-e-gul chhor chala dil mera paagal nikla
--------------------------------
جب بہار آئی تو صحرا کی طرف چل نکلا
صحنِ گُل چھوڑ گیا، دل میرا پاگل نکلا

جب اسے ڈھونڈنے نکلے تو نشاں تک نہ ملا
دل میں موجود رہا۔ آنکھہ سے اوجھل نکلا

اک ملاقات تھی جو دل کوسدا یاد رہی
ہم جسے عمر سمجھتے تھے وہ اک پل نکلا

وہ جو افسانہء غم سن کے ہنسا کرتے تھے
اتنا روئے ہیں کہ سب آنکھہ کا کاجل نکلا

ہم سکوں ڈھونڈنے نکلے تھے، پریشان رہے
شہر تو شہر ہے، جنگل بھی نہ جنگل نکلا

کون ایوب پریشاں نہیں تاریکی میں
چاند افلاک پہ،دل سینے میں بے کل نکلا

(ایوب رومانی)

Loading related videos...