285,776 views 661 on YTPak
441 22

Published on 30 Jun 2010 | over 7 years ago

Kalam: Nahi Ishq mai Iska to Runj humein
Poet: Bahadur Shah Zafar
Singer: Hina Nasarullah

نہیں عشق میں اس کا تو رنج ہمیں
کہ قراروشکیب ذرا نہ رہا
غمِ عشق تو اپنا رفیق رہا
کوئی اور بلا سے رہا نہ رہا

نہ تھی حال کی جب ہمیں اپنی خبر
رہے دیکھتے اوروں کے عیب و ہنر
پڑی اپنی برائیوں پہ نظر
تو نگاہ میں کوئی برا نہ رہا

دیا اپنی خودی کو جو ہم نے اٹھا
وہ جو پردہ سا تھا بیچ میں نہ رہا
رہے پردے میں اب نہ وہ پردہ نشیں
کوئی دوسرا اسکے سوا نہ رہا

ظفر آدمی اس کو نہ جانیے گا
ہو وہ کیسا ہی صاحبِ فہم و ذکا
جسے عیش میں یادِ خدا نہ رہی
جسے طیش میں خوفِ خدا نہ رہا

Loading related videos...