74,345 views 679 on YTPak
254 47

Published on 18 Jan 2015 | about 1 year ago

emembrance of APS martyrs sacrifices

Lyrics:

میں ایسی قوم سے ہوں جس کے بچوں سے وہ ڈرتا ہے میں ایسی قوم سے ہوں جس کے بچوں سے وہ ڈرتا ہے بڑا دشمن بنا پھرتا ہے جو بچوں سے لڑتا ہے بتا کیا پوچھتا ہے وہ کتابوں میں ملوں گا میں کیے ماں سے ہیں جومیں نےکہ وعدوں میں ملوں گا میں میں آنے والا کل ہوں ،مجھے وہ کیوں آج مارے گا یہ اُس کا وہم ہوگاکہ وہ ایسے خواب مارے گا تمہارا خون ہوں نہ اس لئے اچھا لڑا ہوں میں بتا آیا ہوں دشمن کو کہ اُس سے تو بڑا ہوں میں میں ایسی قوم سے ہوں جس کے بچوں سے وہ ڈرتا ہے بڑا دشمن بنا پھرتا ہے جو بچوں سے لڑتا ہے وہ جب آتے ہوئے مجھکو گلے تم نے لگایا تھا امان اللہ کہا مجھکومیرا بیٹا بُلایا تھا خدا کے امن کی راہ میں کہاں سے آگیا تھا وہ جہاں تم چومتی تھیں ماں وہاں تک آگیا تھا وہ میں ایسی قوم سے ہوں جس کے بچوں سے وہ ڈرتا ہے بڑا دشمن بنا پھرتا ہے جو بچوں سے لڑتا ہے مجھے جانا پڑا ہے پر میرابھائی کرے گا اب میں جتنا نہ پڑھا وہ سب میرا بھائی پڑھے گا اب میں ایسی قوم سے ہوں جس کے بچوں سے وہ ڈرتا ہے بڑا دشمن بنا پھرتا ہے جو بچوں سے لڑتا ہے ابھی بابا بھی باقی ہیں کہاں تک جاسکوگے تم ابھی وعدہ رہا تم سے یہاں نہ آسکوگے تم میں ایسی قوم سے ہوں جس کے بچوں سے وہ ڈرتا ہے بڑا دشمن بنا پھرتا ہے جو بچوں سے لڑتا ہے
~~ Thanks to Mr. Naseem ~~

Loading related videos...