60,060 views 310 on YTPak
45 23

Published on 16 Nov 2013 | over 3 years ago

اولپنڈی: عاشورہ کے جلوس کے موقع پر جلوس کے روٹ پر ایک مسجدِ ضرار میں سے خطبے میں ظالم و فاسق یزید لعنتی کو (معاذ اللہ) رضی اللہ کہہ کر پکاراا گیا اور نواسٔہ رسول حضرت امام حسین ؑ پر تنقید کی گی جس پر سنی اور شیعہ عزادروں نے انتظامیہ سے اس مسجد ِ ضرارکے مولوی جو دہشت گرد تنظیم سپاہ صحابہ کا رکن ہے کو روکوانے کو کہا مگر انتظامیہ نے کوئی توجہ نہیں دی جس پر عزاداروں نے احتجاج کیا۔اس وقت مسجد سے پتھراؤہوا ور فائرنگ کی گئی ، کچھ دلیر اور جانباز نوجوانوں نے اس ملعون فسادی مولوی کو پکڑنے کا ارادہ کیا جس نے نواسۂ رسول ؐ، حضرت امام حسین ؑ کی توہین کی مگر جیسے ہی اسکے قریب پہنچے سپاہ صحابہ کے دہشت گردوں نے فائزنگ کی جسکے نتیجے میں 55 افرد زخمی ہوۓ۔

جو بھی راولپنڈی واقعے کو "فرقہ وارانہ" فساد کہہ رہا ہے وہ پاکستان اور مسلمانوں کے ساتھ بہت بڑی خیانت کر رہا ہے۔ دہشت گرد جماعت کالعدم سپاہ صحابہ کا اہل سنت مسلمانوں سے کوئی تعلق نہیں اور اگر وہ دہشت گرد خود کو بطور سنی متعارف کرواتے ہیں تو درحقیقت اس سے اہل سنت کی توہین ہوتی ہے۔

آج پوری دنیا کے شیعہ سنی مسلمان بھائی مظلومِ کربلا، نواسۂ رسول ﷺکی یاد منا رہے تھے اور ظالم یزید پر لعنت بھیج رہے تھے لیکن صرف کالعدم سپاہ صحابہ نے یزید کا دفاع کیا۔ وقت آ گیا ہے کہ اہلِ سنت علما بھی واضح انداز میں تکفیریوں سے اظہارِ نفرت و برأت کریں ورنہ ان کے مسلک پر دہشت گردی کی چھاپ لگ جائے گی۔

Loading related videos...